PHARMACEUTICAL REVIEW

ISSN 2220-5187; We distribute and report the potential information of biological or life sciences – medicine, dentistry, pharmacy, nursing, veterinary, food, livestock, agriculture and public health. We publish the most current news, innovations, interviews and events (conferences, exhibitions, workshops, seminars). The professional bodies, business entrepreneurs, academic institutions and research organizations may contact us to market their events and business. We will help you to promote and advertise your products and services.


Leave a comment

An anonymous traditional Hakeem in Andhra Pardesh, India wrote poem in late 60’s.

یہ نظم آج سے پچاس سال قبل راندھیر (بھارت) کے ایک حکیم صاحب نے کہی تھی ، جو شاعر بھی تھے)

جہاں تک کام چلتا ہو غذا سے
وہاں تک چاہیےG بچنا دوا سے

اگر خوں کم بنے، بلغم زیادہ
تو کھا گاجر، چنے ، شلغم زیادہ

جگر کے بل پہ ہے انسان جیتا
اگر ضعف جگر ہے کھا پپیتا

جگر میں ہو اگر گرمی کا احساس
مربّہ آملہ کھا یا انناس

اگر ہوتی ہے معدہ میں گرانی
تو پی لی سونف یا ادرک کا پانی

تھکن سے ہوں اگر عضلات ڈھیلے
تو فوراََ دودھ گرما گرم پی لے

جو دکھتا ہو گلا نزلے کے مارے
تو کر نمکین پانی کے غرارے

اگر ہو درد سے دانتوں کے بے کل
تو انگلی سے مسوڑوں پر نمک مَل

جو طاقت میں کمی ہوتی ہو محسوس
تو مصری کی ڈلی ملتان کی چوس

شفا چاہیے اگر کھانسی سے جلدی
تو پی لے دودھ میں تھوڑی سی ہلدی

اگر کانوں میں تکلیف ہووے
تو سرسوں کا تیل پھائے سے نچوڑے

اگر آنکھوں میں پڑ جاتے ہوں جالے
تو دکھنی مرچ گھی کے ساتھ کھا لے

تپ دق سے اگر چاہیے رہائی
بدل پانی کے گّنا چوس بھائی

دمہ میں یہ غذا بے شک ہے اچھی
کھٹائی چھوڑ کھا دریا کی مچھلی

اگر تجھ کو لگے جاڑے میں سردی
تو استعمال کر انڈے کی زردی

جو بد ہضمی میں تو چاہے افاقہ
تو دو اِک وقت کا کر لے تو فاقہ

دعاؤں کا طالب

محمد نورالحسن ندوی

Advertisements


Leave a comment

Oath Taking Ceremony of new cabinet of Pakistan Pharmacist Association (PPA) Punjab, Pakistan.

Pharmaceutical Review (Staff reporter). The Oath Taking Ceremony of Pakistan Pharmacist Association (PPA) Punjab branch held in Mughal Azam Fort, Barkat Market, Lahore, Pakistan on October 7, 2017. There was only one group “United Pharmacist” has participated in the Election 2017. The members of this group have successfully cast their right of votes in the favor of their one and only panel of contestants. So the regimen has now been changed in such a non-democratic course of action.

If we analyze the situation in depth, the “Professional Group” of PPA has ruled organization for thirty years. But, unluckily they have achieved personal advantages and badly failed to deliver for profession in Pakistan. There was no any other option, but to kick them away forcefully by this awful, nondemocratic and terrible scheme. Some analysts also correlate the ending the regime of Professional Group with the Supreme Court sentence of disqualification of Ex-Prime Minister Mian Muhammad Nowaz Sharif.

Now pharmacist community of Punjab province wishes to move forward with this new command. These new stakeholders should understand the challenges of pharmacy profession. They have to work hard to deliver for community in Pakistan.


Leave a comment

ناکامی پر دکھی اور جذباتی ہونا اگلی کامیابی کو ممکن بناسکتا ہے

ٹیکساس: یونیورسٹی آف کینساس میں مارکیٹنگ کے پروفیسر نیول نیلسن نے کہا ہے کہ اگر کسی کام میں ناکامی ہوجائے تو ذہنی طور پر اسے جاننے کے بجائے اس کا صدمہ لینا اور جذباتی ہونا قدرے فائدہ مند ہوتا ہے۔ اس طرح سے لوگ اگلی ایسی ہی صورتحال پر اچھی کارکردگی دکھاتے ہیں اور کامیاب بھی ہوسکتے ہیں۔

اس تحقیق کے بعد کینساس یونیورسٹی اسکول آف بزنس کے معاون پروفیسر نیول نیلسن کہتے ہیں، ’ناکامی کے بعد خیالات کے بجائے جذبات پر توجہ دینے سے لوگوں پر اچھے اثرات مرتب ہوتے ہیں اور ان کی کارکردگی بہتر ہوجاتی ہے۔‘ اس تحقیق میں انہوں نے شعوری خیالات اور جذبات واحساسات پر تحقیق کی ہے۔

ماہرین نے انڈرگریجویٹ کے چند طالب علموں کو تین گروہوں میں تقسیم کیا۔ ان سے کہا گیا کہ وہ آن لائن ایک جوسر بلینڈر تلاش کریں جس کی قیمت کم سے کم ہو اور ایسا کرنے والے کو کیش ایوارڈ دیا جائے گا۔ اب کمپیوٹر نے ایک کھیل کھیلا اور قیمت ڈھونڈنے کے بعد انہیں بتایا کہ جو قیمت وہ لائے ہیں اس سے بھی سوا تین ڈالر کم میں وہ شے مل رہی ہے۔ اس کے بعد کسی کو بھی 50 ڈالر کا انعام نہیں مل سکا۔اس ناکامی پر مختلف لوگوں نے مختلف اثر لیا۔ بعض جذباتی کیفیت میں آگئے اور بعض افراد نے اس کا شعوری احساس کیا اور ناکامی کا عقلی جائزہ لینے لگے۔ ان میں سے جو لوگ جذباتی ہوئے تھے اگلی مرتبہ وہ زیادہ پرعزم تھے اور انہوں نے ایسے ہی دوسرے ٹیسٹ میں اچھی کارکردگی دکھائی۔ تاہم اس کا صرف عقلی شعور رکھنے والوں نے بھی دوبارہ اس سے تھوڑی بہتر کارکردگی ظاہر کی۔


Leave a comment

کیا مچھلی کھانے کے بعد دودھ پینا خطرناک ہے؟

کراچی: عام طور پر کہا جاتا ہے کہ مچھلی کھانے کے بعد دودھ نہیں پینا چاہیے ورنہ چہرے پر سفید داغ پڑجاتے ہیں اور صحت خراب ہوجاتی ہے۔ اس بات میں کتنی سچائی ہے؟ زیر نظر تحریر میں مختلف حوالوں سے اسی سوال کا جواب دیا گیا ہے۔

طبِ مشرق میں کسی بھی چیز کے تین ممکنہ خواص ہوتے ہیں: سرد، گرم اور معتدل۔ دودھ کی تاثیر سرد ہے جبکہ مچھلی کی تاثیر گرم ہے۔ یہی وجہ ہے کہ حکمت اور آیورویدک طریقہ علاج، دونوں کے تحت سرد اور گرم تاثیر والی چیزیں ایک ساتھ کھانے کا ردِعمل ظاہر ہوتا ہے جو جلد پر سفید لیکن بدنما دھبوں کے علاوہ مختلف اقسام کی الرجی اور بخار تک کی شکل اختیار کرسکتا ہے۔ اسی لیے روایتی طور پر مچھلی کھانے سے پہلے یا بعد میں دودھ، دہی، پنیر وغیرہ کھانے سے منع کیا جاتا ہے۔

جہاں تک جدید سائنسی تحقیق کا تعلق ہے تو اب تک ایسا کوئی مصدقہ سائنسی مطالعہ سامنے نہیں آسکا ہے جو یہ ثابت کرتا ہو کہ مچھلی کھانے سے پہلے یا بعد میں دودھ پینے سے جسم پر برے اثرات پڑتے ہیں۔ بلکہ اس وقت بہت سی ایسی غذائیں دستیاب ہیں جن میں بیک وقت مچھلی، دہی اور دودھ شامل ہوتے ہیں اور انہیں دل کے ساتھ ساتھ دماغ کےلیے بھی مفید پایا گیا ہے۔